سلسلہ نمبر: 738 حالتِ حمل میں طلاق واقع ہونے کا حکم

Header Ads Widget

سلسلہ نمبر: 738 حالتِ حمل میں طلاق واقع ہونے کا حکم

  آج کی آچھی بات


بسْــــــــــــــمِ ﷲِالرَّحْمن الرَّحِيم 

​اَلسَّلَامُ عَلَیْکُم وَرَحْمَةُ اللهِ وَبَرَكَاتُه‌​

صفر المصفر 29 , 1443 ھِجْــرِی

ستمبر 27, 2021 عِیسَوی

اسوج 23,  2077 بکـــــرمی

بـــــروز جمعرات  THURSDAY   

اِصلاحِ اَغلاط: عوام میں رائج غلطیوں کی اِصلاح

سلسلہ نمبر: 738

حالتِ حمل میں طلاق واقع ہونے کا حکم

 

حالتِ حمل میں طلاق واقع ہونے کا حکم


اگر شوہر اپنی بیوی کو حالتِ حمل میں طلاق دے دے تو اس صورت میں بھی طلاق واقع ہوجاتی ہے، کیوں کہ اوّل تو قرآن وسنت کی رو سے طلاق واقع ہونے کے معاملے میں حالتِ حمل کو کوئی استثنا حاصل نہیں جس سے یہ معلوم ہورہا ہو کہ حالتِ حمل میں طلاق دینے سے طلاق واقع نہیں ہوتی۔ دوم یہ کہ قرآن وسنت سے حالتِ حمل میں طلاق دینے کی کوئی ممانعت ثابت نہیں۔ سوم یہ کہ بعض احادیث مبارکہ سے تو صراحت کے ساتھ حالتِ حمل میں طلاق واقع ہونے کا جواز ہی معلوم ہوتا ہے۔ 

باقی اس صورت میں کونسی طلاق واقع ہوتی ہے؟ تو یہ عام حالات کی طرح شوہر کے الفاظ ہی پر موقوف ہے کہ شوہر نے جن الفاظ کے ساتھ حاملہ بیوی کو طلاق دی ہو تو انھی کے مطابق طلاق واقع ہوگی۔ اس لیے اگر ایسا کوئی واقعہ پیش آجائے تو اس کے بارے میں شوہر کے الفاظِ طلاق ذکر کرکے مستند اہلِ علم سے راہنمائی لے لی جائے۔

  (مأخذ: فتاویٰ عثمانی: 2/ 318) 

(مکتبہ معارف القرآن کراچی)

نتیجہ 

مذکورہ تفصیل سے اُن لوگوں کی غلطی معلوم

 ہوجاتی ہے کہ جویہ سمجھتے ہیں کہ حاملہ عورت کو طلاق دینے سے طلاق واقع نہیں ہوتی۔


عبارات


 صحيح مسلم:3732-

 حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِى شَيْبَةَ وَزُهَيْرُ بْنُ حَرْبٍ وَابْنُ نُمَيْرٍ -وَاللَّفْظُ لأَبِى بَكْرٍ- قَالُوا: حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ سُفْيَانَ عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ مَوْلَى آلِ طَلْحَةَ عَنْ سَالِمٍ عَنِ ابْنِ عُمَرَ أَنَّهُ طَلَّقَ امْرَأَتَهُ وَهْىَ حَائِضٌ فَذَكَرَ ذَلِكَ عُمَرُ لِلنَّبِىِّ ﷺ فَقَالَ: «مُرْهُ فَلْيُرَاجِعْهَا ثُمَّ لْيُطَلِّقْهَا طَاهِرًا أَوْ حَامِلًا». (باب تَحْرِيمِ طَلَاقِ الْحَائِضِ بِغَيْرِ رِضَاهَا وَأَنَّهُ لَوْ خَالَفَ وَقَعَ الطَّلَاقُ وَيُؤْمَرُ بِرَجْعَتِهَا)

 مصنف ابن أبي شيبة:18299-

 حَدَّثَنَا وَكِيعٌ عَنْ سُفْيَانَ، عَنْ مَنْصُورٍ، عَنْ إبْرَاهِيمَ، (ح) وَعَنْ جَابِرٍ، عَنْ عَامِرٍ (ح) وَعَنْ عِمْرَانَ بْنِ مُسْلِمٍ، عَنِ ابْنِ عِقَال، عَنْ مُصْعَبِ بْنِ سَعْدٍ وَأَبِي مَالِكٍ وَعَبْدِ اللهِ بْنِ شَدَّادٍ قَالُوا: إذَا طَلَّقَ الرَّجُلُ امْرَأَتَهُ ثَلَاثًا وَهِيَ حَامِلٌ، لَمْ تَحِلَّ لَهُ حَتَّى تَنْكِحَ زَوْجًا غَيْرَهُ. 

(بَابُ مَنْ قَالَ إذَا طَلَّقَ امْرَأَتَهُ ثَلَاثًا وَهِيَ حَامِلٌ، لَمْ تَحِلَّ لَهُ حَتَّى تَنْكِحَ زَوْجًا غَيْرَهُ)

 الموسوعة الفقهية الكويتية

يَصِحُّ طَلَاقُ الْحَامِل رَجْعِيًّا وَبَائِنًا بِاتِّفَاقِ الْفُقَهَاءِ. وَيُعْتَبَرُ طَلَاقُهَا طَلَاقَ السُّنَّةِ إِنْ طَلَّقَهَا وَاحِدَةً عَنْ عَامَّةِ الْفُقَهَاءِ، أَوْ ثَلَاثًا يَفْصِل بَيْنَ كُل تَطْلِيقَتَيْنِ بِشَهْرٍ عِنْدَ الْبَعْضِ. وَانْظُرْ (طَلَاقٌ). فَإِذَا طَلَّقَهَا رَجْعِيًّا صَحَّ رُجُوعُ الزَّوْجِ إِلَيْهَا أَثْنَاءَ الْعِدَّةِ. وَيَصِحُّ لَهُ نِكَاحُهَا بَعْدَ انْقِضَاءِ الْعِدَّةِ أَوْ إِذَا طَلَّقَهَا بَائِنًا بِطَلْقَةٍ أَوْ طَلْقَتَيْنِ، بِخِلَافِ مَا إِذَا طَلَّقَهَا ثَلَاثًا حَيْثُ لَا يَجُوزُ نِكَاحُهَا مُطْلَقًا إِلَّا بَعْدَ وَضْعِ الْحَمْل، وَلَا تَحِل لِمُطَلِّقِهَا ثَلَاثًا إِلَّا بَعْدَ أَنْ تَنْكِحَ زَوْجًا غَيْرَهُ. 

(حامل: طَلَاقُ الْحَامِل)


۔۔۔ مفتی مبین الرحمٰن صاحب مدظلہ

فاضل جامعہ دار العلوم کراچی

محلہ بلال مسجد نیو حاجی کیمپ سلطان آباد کراچی

 صفر المظفّر 1443,15ھ/ 23 ستمبر 2021

03362579499

……………………………………………


صدقہ جاریہ کمائیں


اپنے دوستوں کو آج کی آچھی بات ویب سائٹ کو روز دیکھیں اور اپنے دوستوں کو بھی لنک سینڈ کریں

اس گروپ میں اسلامی تحریریں, قرآن پاک کا ترجمہ, احادیث, قصص الانبياء, اسلامی واقعات اور صحابہ کرام کے قصے شئیر کئے جاتے ہیں ,

گروپ جوائن کریں اور صراط مستقیم پر چل کر جنت کے حقدار بن جائیں

ان شاء اللہ 

روزانہ ایک حدیث مبارک اور قرآن پاک کی آیات کا اردو ترجمہ سبق آموز تحریر 

قصص الانبياء, اسلامی واقعات اورصحابہ کرام کے قصے حاصل

کرنے کے لیے ھمارا گروپ جوائن کریں تاکے ھم دین سیکھ سکیں

آئیں مرنے سے پہلے مرنے کی تیاری کریں

دعا 

یا اللہ یا رحیم یا رحمان یا کریم تمام بنی نوع انسان جو اس دنیا سے رخصت ہو گئے ہیں خصوصا میری والدہ محترمہ ان سب کی آخرت آسان فرما ضغیرہ و کبیر ہ گناہوں کو معاف فرمائے جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے اور درجات بلند فرما انکی قبروں کو منور اور جنت کا باغ بنا دے قبر کی سختیوں اور تکلیفوں کو دور فرما 

ان سب کی اگلی منزلیں آسان فرما جہنم کے عذاب اور جہنم کی آگ سے بچا 

اور ہمیں صحیح دین پر چلنے والا اپنا نیک عاجزی بندہ بنا دے آخرت کی تیاری کرنے کی توفیق عطا فرما

آمین یا رب الالعمین

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے